ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز.

ہفت روزہ ندائے کشمیر کے زیر اہتمام آن لائن نعتیہ مشاعرے کا انعقاد

   292 Views   |      |   Thursday, January, 21, 2021

ہفت روزہ ندائے کشمیر کے زیر اہتمام آن لائن نعتیہ مشاعرے کا انعقاد

نامور شعراء نے نبی کریم ؐ کی ذاتِ عقدس میں گلہائے عقیدت کے پھول نچھاوکئے

پلوامہ/ تنہا ایاز/

ہفت روزہ ندائے کشمیر کے زیر اہتمام آن لائن نعتیہ مشاعرے کا انعقاد۔ وادی کے کئی سرکردہ ، شاعروں، ادیبوں اور قلمکاروں نے شرکت کر کے نعتیہ کلام کے ذریعے نبی کریم ؐ کی ذاتِ عقدس پر عقیدت کے پھول نچھاور کئے۔ تفصیلات کے مطابق سو شل میڈیاپر ہفتہ روزہ اخبارندائے کشمیر کی جانب سے ایک نعتیہ مشاعرے کا انعقاد کیا گیا جس میں دو درجن کے قریب شاعروں ، ادیبوں اور قلمکاروں نے شرکت کر کے اپنا کلام پیش کیا۔ اطلاعات کے مطابق ہفتہ روزہ اخبار ندائے کشمیر کے اہتمام سے سو شل میڈیا وٹس اپ گروپ پر ایک نعتیہ مشاعرہ پروفیسر شاد رمضان کی صدارت میں منعقد ہوا۔ جس میں وادی بھر کے شاعروں ،ادیبوں نے شرکت کرکے نعتیہ کلام کے ذریعے رسول رحمت ؐ کے تئیں خراج عقیدت پیش کیا۔ وادی کے نامور شاعر فیاض تلگامی، عبدالرحمن فد، مقبول فیروزی بطور مہمان خصوصی شریک رہے۔ نظامت کے فرائض غلام محمد دلشاد نے انجام دی۔ یہ مشاعرہ ہفتہ روزہ ندائے کشمیر کے افیشل وٹس اپ گروپ پر آٹھ بجے سے رات ساڑھے دس بجے تک آن لائن جا ری رہا۔ نمائندے کے مطابق نعتیہ مشاعرے میں جن شعرا ء نے شرکت کی اُن میں فرحان ولرہامی، صفدر یوسف، مقبول شیدا، سکندر ارشاد، ریحانہ کونثر، جا وید قلمی، پیر زادہ اعجاز، میر نثار حسین، ظہور ہاگامی، عرفان بشیر، غلام محمد دلشاد، دلکش مظفر، ڈاکٹر شوکت شفاء ، غلام رسول مشکور، ڈاکٹر وحید، مہدہ میر، عبدالرحمن فدا، فیاض تلگامی، مقبول فیروزی اور شاد رمضان قابل ذکر ہے۔ مشاعرے کے آخر پر پروفیسر شاد رمضان اور فیاض تلگامی نے اپنے تفصرے بھی پیش کئے جبکہ غلام محمد دلشاد نے آخر پر تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔

متعلقہ خبریں

شیخ محمد امان زمان ونان چھی بس چھُے خدائی تنہا
کانسہ ما وُن ونکتام چھِ انسان رایہِ تنہا
کانہہ حسین دلکش دعوتھ.

شوکت بڈھ نمبل کشمیری   کیا تخلیق ہم کو انسانوں میں اور پھر مُسلماں
یہ ہم پہ کرم ہے مالک کا یہ اُن کی رفاقت ہے

اہد جمال بانڈے پوشونی سہل چھا یتھ زمانس منزٔ گذارنژیوہ زمانس ستی
کراں یتی کتھ سخنور تاپ زژٔ منزٔ آسمانس ستیٔ

خالد قمر اس گلستان چمن میں
ہوتی تھی اک فضا حسین و جمیل
رہتے تھے جس میں پادشاہ و پارسا
اور آباد تھی اک مخلوق.

نادِم شوقیہ میں اِک قبر ہوں
مجھ میں دفن ہیں
چشمِ نم کی آرزو
بےتہاشہ جستجو
کچھ منَتیں
کچھ حسرتیں