ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز.

پونچھ سیکٹر میں شدید گولی باری

گولی باری کے تازہ واقعات سے خوف و ہراس کا ماحول

   565 Views   |      |   Sunday, January, 24, 2021

سرینگر// کئی دن تک سکوت رہنے کے بعد لائن آف کنٹرول(ایل او سی)کے پونچھ سیکٹر میں ہند پاک افواج کے مابین شدید گولی باری کے تازہ واقعات سے خوف و ہراس کا ماحول ہے اور اس بارے میں دونوں ملکوں نے حسب سابقہ ایک دوسرے پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا ہے۔سی این ایس کے مطابق صبح آٹھ بجے کے قریب پاکستانی رینجرس نے بھارتی چوکیوں کو ہدف بناتے ہوئے فائرنگ اور گولہ باری کی۔بھارتی فورسز نے بھی جوابی فائرنگ اور گولہ باری کی جس سے وقت گزرنے کے ساتھ شدت اختیار کی۔فوج نے بھی مورچہ سنبھالتے ہوئے جوابی فائرنگ کی اور طرفین کے مابین گولی باری کاسلسلہ انتہائی شدت کے ساتھ جاری رہا۔دفاعی ذرائع نے بتایاکہ سرحد پار سے گولی باری کے دوران مارٹر شیل داغے گئے اور خود کار ہتھیاروں سے فائرنگ کی گئی۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے اِس پار کی فوجی چوکیوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی، تاہم اس سے فوج کو کسی قسم کا کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔ترجمان نے کہا ’’ہمارے فوجی جوانوں نے فوری جوابی کارروائی عمل میں لائی اور اسی نوعیت کے ہتھیاروں سے فائرنگ کی‘‘۔آخری اطلاع ملنے تک گولی باری کا سلسلہ جاری تھا جس کے باعث علاقے میں خوف و ہراس پایا جارہا ہے۔گولی باری کے دوران زوردار دھماکے سنائی دئے اور سرحدوں کے نزدیک واقع بستیوں کے لوگ گھروں میں سہم کر رہ گئے۔بھارت نے اس سلسلے میں پاکستان پر سیز فائر کی خلاف ورزی کا الزام عائد کیا ہے جبکہ اسلام آباد نے نئی دلی پر اسی طرح کا جوابی الزام عائد کیا ہے۔ بھارت کا کہنا ہے کہ پاکستانی فوج نے گزشتہ چند ہفتوں کے دوران راجوری اورپونچھ سیکٹر میں کئی بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔ادھراس ضمن میں پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری کئے گئے بیان میں بتایا گیا کہ بھارتی افواج نے بلا اشتعال جموں کشمیر میں لائن آف کنٹرول پر پاکستانی فوج کی چوکیوں پر گولہ باری کی۔تاہم اُس پار بھی کسی قسم کے نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں

گزشتہ شب گلشن کلچرل فورم کشمیراور لسہ خان فدا فاؤنڈیشن نے مشترکہ طور سلسلہ قادریہ وفاضلی کے معروف صوفی بزرگ اور.

تحریر: حافظ میر ابراھیم سلفی عشرتی گھر کی محبت کا مزا بھول گئے
کھا کے لندن کی ہوا عہد وفا بھول گئے
قوم کے غم.

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی نشست بزم فریاد منعقد ہوئ۔ کئ مہینوں کے.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار
روایتی فیرن میں تبدیلی،بازاروں میں کوٹ.

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز انیڈ سپورٹس کی مجانب سے میکس ویل کالج.