ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز.

سفارتی عملے کی کمی سے بھارت پاکستان کے مابین کشیدگی میں اضا فہ ہوگا /ایم ایم انصاری

   262 Views   |      |   Thursday, January, 21, 2021

سرینگر24جون/بھارت پاکستان کے مابین کشیدگی اور تناؤ کوجموں وکشمیرکے لئے ناموافق قرار دیتے ہوئے سابق مزاکراتکار نے بھارت پاکستان کی جا نب سے سفارتی عملے میں کمی کرنے کے اعلان کو افسوس ناک قراردیتے ہوئے کہا کہ اس سے مستقبل میں حالات مزید کشیدہ اور پرتناؤ ہوسکتے ہے اگرمرکزی حکومت جموں وکشمیرمیں حالات کی بہتری کی خواہشمند ہے تواس سے کئی طرح کے اقدامات بھی اٹھانے ہونگے ۔ایک نجی نیوزچینل کے ساتھ گفتگوکے دوران جموں کشمیرکے لئے مقررکئے گئے سابق مذاکرتکار ایم ایم انصاری نے بھارت پاکستان کی جانب سے سفارتی عملے میں 50%کی کمی کے اعلان کو دونوں ممالک کے لئے نقصان دہ قرار دیتے ہوئے اس بات پرافسوس کااظہار کیاکہ بھارت پاکستان کی سیاسی قیادت سفارتی آداب کوبھی ملحوز نظر نہیں رکھ پارہے ہے اورہائی کمشنروں میںکام کرنے والے عملے پردونوں ممالک میں سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے انہیں حراساں کرنے کا سلسلہ برسوں سے جاری ہے جس کے نتیجے میں دونوں ممالک کے مابین کشیدگی میں اضافہ ہوتا ہے ۔سابق مذاکرتکار نے کہاکہ بھارت پاکستان کے مابین تعلقات کی بہتری کے مثبت اثرات نہ صرف برصغیر پرمرتب ہونگے بلکہ جموں وکشمیر پراسکے خاطرخواہ انتائج برآمدہوسکے ہے اور دونوں ممالک کوچاہئے کہ وہ دوراندیشی صبروتحمل اورایک دوسرے کوبرداشت کرنے کی کوشش کرے تاکہ دونوں ممالک میں رہنے والے لوگ متاثرنہ ہوسکے ۔سابق مذاکرات کار نے کہا کہ عملے کی کمی کنج فہمی کے سوااورکچھ نہیں ہے اوردونوں ممالک کی حکومتوں کواس کاسنجیدہ نوٹس لیناچاہئے اورسفارتی آداب کابھی خیال رکھناچاہئے ۔انہوں نے کہاکہ اگرمرکزی حکومت جموں وکشمیر میں امن خوشحالی تر قی کے متمنی ہے تواسے لوگوں کے حوالے سے کئی طرح کے فیصلے لینے ہونگے اور اس کے لئے مرکزی حکومت کو اعلانات کے بجائے عملی اقدامات اٹھانے چاہئے ۔انہوںنے کہا کہ جموں کشمیرکی صورتحال کئی معامات کے حوالے سے نازک بن گئی ہے اورلوگوں کوراحت دینے کی خاطر مرکزی حکومت کوبہت کچھ کرنا ابھی باقی ہے ۔انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کولوگوں کاسننا چاہئے اور ان کے مطالبات کی طرف توجہ دینی ہوگی ۔

متعلقہ خبریں

تحریر: رشید پروین ؔسوپور سلسلہ روزو شب نقش گر حادثات
سلسلہ روزو شب اصل حیات و ممات
سلسلہ روزو شب تارِ حریر.

بہ گلشن بدرنی چھس پننہ تہ پننہ انجمن گلشن کلچرل فورم کشمیرکین تمام ارکانن ہندہ طرفہ کشیر ہندین سرکردہ تہ نمایندہ.

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی نشست بزم فریاد منعقد ہوئ۔ کئ مہینوں کے.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار
روایتی فیرن میں تبدیلی،بازاروں میں کوٹ.

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز انیڈ سپورٹس کی مجانب سے میکس ویل کالج.