ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز.

ریاستی درجہ کی بحالی ناگزیر/غلام حسن میر

   209 Views   |      |   Sunday, January, 24, 2021

سرینگر29//جون//جموں وکشمیر اپنی پارٹی سنیئرلیڈر اور سابقہ وزیر غلام حسن میر نے پارٹی موقف کو دوہراتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت اور عوام کے درمیان بڑھ رہی دوری کو کم کرنے کے لئے ریاستی درجہ کی بحالی ناگزیر ہے۔ بنڈ لال چوک سرینگر میں اپنی پارٹی دفتر کا افتتاح کرنے کے بعد کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے میر نے پارٹی کی پالیسیوں پر تفصیلی روشنی ڈالی ۔ایک گھنٹہ کی نشست جس دوران سماجی دوری اور دیگر ہدایات پر سختی سے عملدرآمد کیاگیا، میں انہوں نے کہاکہ اپنی پارٹی کا مقصد جموں وکشمیر کے سبھی خطوں اور ذیلی علاقوں کی عوام کو راحت فراہم کرنا ہے۔اس نئے سیاسی پلیٹ فارم کو لانچ کرنے کے پیچھے الطاف بخاری کا یہ ویژن ہے کہ اُن تمام ہم خیال لوگوں پیلٹ فارم فراہم کرنا ہے جواپنی ریاست کی دیانتداری و تندہی سے خدمت کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہمارے لئے یہ بڑی خوشی کا مقام ہے کہ ہم گاندھی نگر جموں میں دفتر کھولنے کے ایک ہفتہ بعد سرینگر میں اپنی پارٹی دفتر کا افتتاح کر رہے ہیں، اب اپنی پارٹی ورکروں کی ذمہ داریاں مزیدبڑھ گئی ہیں کیونکہ توقعات اور چیلنجز بہت ہیں تاہم انہوں نے یقین دلایاکہ پارٹی کا سیاسی عزم اتنا مضبوط ہے کہ اُن سبھی چیلنجز کا مقابلہ کرسکتے ہیںجوجموں وکشمیر کے لوگوں کے مفادات کوتحفظ فراہم کرنے کی راہ میںرکاوٹ بنیں گے میر نے کہا’’ پانچ اگست کے بعد جموں وکشمیر کا سیاسی منظر نامہ بہت بدل چکا ہے، لوگ مایوسی کا شکار ہیں کیونکہ اُن کی اقتصادی صورتحال بری طرح متاثر ہوئی ہے، سیاسی غیر یقینیت کے بیچ کویڈ وباء نے عوام کی مشکلات میں کئی گناہ اضافہ کر دیا ، اس لئے چیلنجز بہت زیادہ ہیں۔جموں وکشمیر اپنی پارٹی کی کوشش ہوگی کہ اس خطے میں سماجی۔اقتصادی اور سیاسی استحکام کی بحالی کے لئے اپنی انتھک کوششیں کریں‘‘۔انہوں نے مزید کہااپنی پارٹی کی اہم توجہ اپنے ویژن کو عملی جامہ پہنانے کیلئے جموں و کشمیر بھر سے نمائندے ہونا اورترقی کے لئے سیاست ہے کیونکہ لوگوں کو ایک قابل اعتماد آواز کی کمی محسوس ہورہی ہے جواُن کے مسائل کو اُجاگر کر کے اِن کا ازالہ یقینی بنائے، انہیں یقین ہے کہ اپنی پارٹی اِس سیاسی خلاء کو پورا کرکے عوام کی توقعات پر کھرا اُترے گی۔پارٹی سبھی خطوں اور ذیلی علاقوں میں پل تعمیر کرنے پر یقین رکھتی ہے اور لوگوں کے مابین باہمی تعاون کے لئے ہمیشہ جدوجہد کرے گی تاکہ ریاست جموں و کشمیر بھی ملکی سطح پر مجموعی تعمیر وترقی انڈیکس میں بلندیوں کو چھوئے۔اس موقع پر ظفر اقبال منہاس، رفیع احمد میر، عثمان مجید، محمد اشرف میر، عبدالمجید پڈرو، راجہ منظور ،نور محمد شیخ، غلام محمد بھوان، عبدالرحیم راتھر، جاوید بیگ، شعیب لون، منتظر محی الدین، ڈاکٹر میر سمیع اللہ، جگمہون سنگھ رینہ، عرفان نقیب، شوکت غیور، فاروق اندرابی، ایڈووکیٹ میر جاوید، مشتاق احمد، عبدالرشید بھٹ، عبدالرشید میر، لطیف احمد خان، شوکت میر، نذیر احمد وانی، محمد اشرف ڈار، اعجاز احمد راتھر، جیلانی کمار، اوزیر رونگا، غلام محمد میر، مشتاق احمد گنائی، امتیاز احمد راتھر، مظفر احمد ریشی اور عاشق حسین ڈار نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

متعلقہ خبریں

تحریر: رشید پروین ؔسوپور سلسلہ روزو شب نقش گر حادثات
سلسلہ روزو شب اصل حیات و ممات
سلسلہ روزو شب تارِ حریر.

بہ گلشن بدرنی چھس پننہ تہ پننہ انجمن گلشن کلچرل فورم کشمیرکین تمام ارکانن ہندہ طرفہ کشیر ہندین سرکردہ تہ نمایندہ.

گزشتہ شب گلشن کلچرل فورم کشمیراور لسہ خان فدا فاؤنڈیشن نے مشترکہ طور سلسلہ قادریہ وفاضلی کے معروف صوفی بزرگ اور.

تحریر: حافظ میر ابراھیم سلفی عشرتی گھر کی محبت کا مزا بھول گئے
کھا کے لندن کی ہوا عہد وفا بھول گئے
قوم کے غم.

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی نشست بزم فریاد منعقد ہوئ۔ کئ مہینوں کے.