ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی.

جدید دور میں گرمی دینے والے آلات کے باوجود بھی کانگڑی کی اہمیت برقرار

آٹھ زونوں سے لڑکوں اور لڑکیوں نے حصہ لیا
پلوامہ/ تنہا ایاز /
یوتھ سروسز.

بھارت مکالمے کے ذریعے تنازعات کے پُرامن حل کاخواہاں

   138 Views   |      |   Thursday, January, 21, 2021

بھارت مکالمے کے ذریعے تنازعات کے پُرامن حل کاخواہاں

ملک کی خودمختاری اورعلاقائی سا لمیت مقدم
ہم یکطرفہ پن اور جارحیت کا مقابلہ کرنے کیلئے پرعزم :راجناتھ سنگھ
سری نگر:5،نومبر//وزیردفاع راجناتھ سنگھ نے جمعرات کوکہاکہ بھارت اپنے ہمسایہ ممالک کیساتھ تنازعات کومذکرات کے ذریعے پُرامن طورپرحل کرنے کاخواہاں ہے تاہم انہوں نے واضح کیاکہ کسی بھی یکطرفہ جارحیت کامقابلہ کرتے ہوئے ملک کی خودمختاری اورعلاقائی سا لمیت کے تحفظ کویقینی بنانے کیلئے بھی ہم پُرعزم ہیں ۔وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ وہ ریاستی پالیسی کے طور پر دہشت گردی کے استعمال میں ’ڈٹاہوا‘ ہے ۔جے کے این ایس مانٹرینگ ڈیسک کے مطابق مشرقی لداخ میں حقیقی لائن آف کنٹرول پر چین کیساتھ جاری سرحدی کشیدگی کے ساتویں مہینے میں داخل ہونے کے تناظر میں وزیردفاع راجناتھ سنگھ کاکہناتھاکہ بھارت ایک امن پسند ملک ہے اورہم اختلافات کوبات چیت کے ذریعے نپٹنانے کی پالیسی پرکاربندہیں تاکہ اختلافات کسی بڑے تنازعے کی شکل اختیار نہ کریں ۔انہوں نے کہاکہ بھارت اپنی خودمختاری اورعلاقائی سا لمیت کی حفاظت کویقینی بنانے کاوعدہ بند بھی ہے اوراس حوالے سے پوراملک پُرعزم بھی ہے ۔راجناتھ سنگھ نے کہاکہ بھارت کسی ملک کیخلاف جارحانہ عزائم نہیں رکھتاہے ،اورساتھ ہی ہم کسی بھی ملک کی یکطرفہ جارحیت کوبھی برداشت نہیں کریں گے ۔وزیر دفاع نے یہ بھی کہا کہ بھارت بات چیت کے ذریعے اختلافات کے پر امن حل کو اہمیت دیتا ہے اور وہ سرحدوں کے ساتھ امن کی بحالی کے لئے مختلف معاہدوں کا احترام کرنے کا پابند ہے۔انہوں نے قومی دفاعی کالج کے زیر اہتمام ایک ورچوئل سیمینار میں خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بھارت یکطرفہ پن اور جارحیت کے مقابلہ میں اپنی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے تحفظ کے لئے پرعزم ہے۔راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ہندوستان ایک امن پسند ملک ہے اور اس کا ماننا ہے کہ اختلافات تنازعات نہیں بننا چاہئے۔اپنے خطاب میں ، وزیر دفاع نے ہندوستان کی فوجی صلاحیت کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ گھریلو دفاعی پیداوار کو فروغ دینے کی کوششوں کے بارے میں بھی بات کی۔انہوں نے کہاکہ امن کو صرف جنگ کی روک تھام کی صلاحیت کے ذریعے ہی یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ راجناتھ سنگھ نے کہاکہ ہم نے استعداد کار کی ترقی اور مقامی کاری کے ذریعہ عدم استحکام پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔پاکستان کے بارے میں وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہا کہ وہ ریاستی پالیسی کے طور پر دہشت گردی کے استعمال میں ’ڈٹاہوا‘ ہے۔خیال رہے ہندوستان اور چین کے مابین تعطل کا آغاز6 مئی کو ہوا تھا اوردونوں ملکوں کے تعلقات میں نمایاں طور پر تناپیداہو۔ دونوں فریقوں نے سرحدی کشیدگی کو حل کرنے کے لئے سفارتی اور فوجی مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھا۔ تاہم اس تعطل کو ختم کرنے کے لئے ابھی تک کوئی پیشرفت حاصل نہیں ہوئی ہے۔اس دوران معلوم ہواکہ ہندوستان اور چین کے مابین کور کمانڈر سطح کے مذاکرات کا آٹھویں دور جمعہ کو ہونے کا امکان ہے۔

متعلقہ خبریں

تحریر: رشید پروین ؔسوپور سلسلہ روزو شب نقش گر حادثات
سلسلہ روزو شب اصل حیات و ممات
سلسلہ روزو شب تارِ حریر.

بہ گلشن بدرنی چھس پننہ تہ پننہ انجمن گلشن کلچرل فورم کشمیرکین تمام ارکانن ہندہ طرفہ کشیر ہندین سرکردہ تہ نمایندہ.

گزشتہ شب گلشن کلچرل فورم کشمیراور لسہ خان فدا فاؤنڈیشن نے مشترکہ طور سلسلہ قادریہ وفاضلی کے معروف صوفی بزرگ اور.

تحریر: حافظ میر ابراھیم سلفی عشرتی گھر کی محبت کا مزا بھول گئے
کھا کے لندن کی ہوا عہد وفا بھول گئے
قوم کے غم.

آج یہاں سنور کلی پورہ ماگام میں گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے ایک ادبی نشست بزم فریاد منعقد ہوئ۔ کئ مہینوں کے.