ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

پلوامہ جم خانہ نے شوپیان کو شکست دی، میچ دیکھنے کیلئے پورا ضلع اُمڈ آیا پلوامہ.

شاذونادرہی ملکی وغیرملکی سیاحوں کی آمد ،مقامی سیلانی ہی شکارہ والوں کی.

کارخانوں کو جدید ساز و سامان سے لیس کرنے کیلئے رعایت کا مطالبہ سرینگر؍22،ستمبر.

بارہمولہ میں معمر شہر ی کی ہلاکت

   273 Views   |      |   Thursday, September, 24, 2020

ہڑتا ل سے دکانیں اور کاروباری ادار ے بند

شبنم جاوید

سرینگر/ / بارہمولہ میں فورسز گاڑی کی زد میں آ نے والے معمر شہر ی کی ہلاکت کے خلاف ہڑتا ل سے دکانیں اور کاروباری ادار ے بند رہے جبکہ سڑ کوں پر ٹرانسپورٹ بند رہا۔ اس دوران جابحق ہو ئے شہر ی کو آ زادی اور اسلام کے نعروں کے بیچ سپرد خاک کیا گیا۔نمائندے کے مطابق گزشتہ شام بارہمولہ کے دلنہ علاقے میں پولیس کی ایک ٹیم توصیف احمد آہنگر ولد عبدالعزیز کی گرفتاری کیلئے پہنچی۔ معلوم ہوا ہے کہ چھا پے کی خبر ملتے ہی نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد کے ساتھ ساتھ اسکے اہلخانہ بھی سڑ کوں پر نکل کر احتجاج کرنے لگے جس کے دوران 65سالہ عبدالعزیز آہنگر کوایک پولیس گاڑی نے زور دار ٹکر ماردی ہے اور وہ وہ موقعے پر ہی لقمہ اجل بن گیا۔ اگرچہ اسے اسپتال لیجانے کی کوشش کی گئی تاہم وہان موجود ڈاکٹروں نے اسے مرد ہ قرار دیا۔ اس کی میت جب واپس گھر لائیی گئی تو وہاں کہرام مچ گیا۔ اس ہلاکت کے بعد رات بھر علاقہ میں احتجاج جاری تھا۔ مہلوک شہری کے افراد خانہ کا کہنا ہے کہ پولیس نے اس حادثے سے قبل عبدالعزیز کے بیٹے توصیف احمد آہنگر کو گرفتار کرنے کی کوشش کی تھی اور اپنے بیٹے کی گرفتاری کی مزاحمت کرتے ہوئے عبدالعزیز پولیس گاڑی کے نیچے آکر کچلا گیا۔وہ موقعے پر ہی لقمہ اجل بن گیا۔ رات بھر میت گھر میں رکھی گئی جس کے بعد صبح اسے دلنہ بارہمولہ میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد کی موجودگی میں سپرد خاک کیا گیا اسکی نماز جنازہ میں سینکڑوں لوگوںنے شرکت کی۔ دلنہ سوگ میں ڈوبا ہوا تھا اور گھر کے ہر طرف چیخ و پکار کی آوازیں سنائی دے رہی تھیں ۔ مہلو ک شہر ی کے گھر پر سینکڑوں لوگوں نے شرکت کرکے پسماندگان کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے کے علاوہ مہلوک کے حق میں دعائے مغفرت بھی کیا۔اس ہلاکت کے خلاف بارہمولہ اور اسکے مضا فاتی علاقوں میں مکمل ہڑتا ل سے تمام دکانیں اور دیگر کاروباری ادارے بند رہے اور ٹرانسپورٹ معطل رہا۔ لوگوں کی ۔ کشیدگی کے پیش نظر قصبے میں فورسز کی بھاری تعیناتی عمل میں لائی گئی تھی۔ادھر سید علی گیلانی نے دلنہ بارہ مولہ کے عبدالعزیز آہنگر کو پولیس کی گاڑی کی زد میں لاکر ہلاک کرنے کی کارروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے غمزدہ خاندان کے ساتھ یکجہتی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ حریت صدر دفتر کو بارہ مولہ سے ملی اطلاعات کے مطابق کل مورخہ 7؍مارچ کو رات 8:45پر پولیس اور ایس ٹی ایف اہلکاروں نے عبدالعزیز آہنگر کے گھر چھاپہ ڈال کر اس کے بیٹے شوکت احمد آہنگر کو گرفتار کرنے کی کوشش کی اور بتایا کہ آپ کا بیٹا پتھراؤ میں ملوث ہے، جس پر عبدالعزیز گنائی نے استفار کیا کہ میرا بیٹا مزدوری کرتا ہے اور وہ اپنے ایک ہمسایہ کے گھر پر کام کرتا ہے، وہ کیسے کسی پتھراؤ میں ملوث ہوسکتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق عبدالعزیز گنائی نے STFاہلکاروں سے کہا کہ میرا بیٹا بے قصور ہے اس لیے میں اپنے بیٹے کو آپ کے ساتھ جانے نہیں دوں گا، جس پر مذکورہ فورسز اہلکار بے قابو ہوگئے اور انہوں نے گھر کی توڑ پھوڑ کے ساتھ عبدالعزیز گنائی کو نیچے سڑک پر پھینک کر اس کے اوپر سے گاڑی چلائی جس کے نتیجے میں وہ جانبحق ہوا۔ گیلانی صاحب نے ایس ٹی ایف کی اس کارروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس کی کسی غیر جانبدار ادارے کے ذریعے سے تحقیقات کرانے پر زور دیا ہے۔ انہوں نے کہا جموں کشمیر میں اس وقت پی ڈی پی اور بی جے پی کی مخلوظ حکومت کا ’’راون راج‘‘ چلتا ہے، جس میں نہ ہماری جان، نا مال وجائیداد اور ناہی عزت محفوظ ہے۔ اس حکومت نے وردی پوش اہلکاروں کو کشمیریوں کی نسلی صفائی کی کھلی چھوٹ دے رکھی ہے اور وہ یہاں نہتے انسانوں کے خون کے ساتھ ہولی کھیل رہے ہیں جس کے لیے حکومت تحقیقات کے نام پر انہیں Coverفراہم کررہی ہے۔

متعلقہ خبریں

کسی کو گھر ملا حصے میں یا کوئی دکان آئی میں گھر میں سب سے چھوٹا تھا میرے حصے میں ماں آئی ماں لفظ سنتے ہی دنیا بھر.

پلوامہ جم خانہ نے شوپیان کو شکست دی، میچ دیکھنے کیلئے پورا ضلع اُمڈ آیا پلوامہ / تنہا ایاز/ لانتھورہ کرکٹ لیگ شوپیان.

شاذونادرہی ملکی وغیرملکی سیاحوں کی آمد ،مقامی سیلانی ہی شکارہ والوں کی روزی روٹی کاذریعہ سری نگر:۲۲،ستمبر/فروٹ.

کارخانوں کو جدید ساز و سامان سے لیس کرنے کیلئے رعایت کا مطالبہ سرینگر؍22،ستمبر ؍حکومت کی جانب سے معاشی پیکیج کے.

اکھنور میں حد متارکہ کے نزدیک اسلحہ وگولی بارود برآمد کیا گیا :فوج
سرینگر؍22،ستمبر ؍ہتھیاروں کی سپلائی کے لئے.